}); اللہ كرے مرحلۂ شوق نہ ہو طے ۔۔۔! – ابن حنبل انٹرنیشنل
ہمارا تعارف

اللہ كرے مرحلۂ شوق نہ ہو طے ۔۔۔!

اللہ كرے مرحلۂ شوق نہ ہو طے ۔۔۔!
(عبدالباسط عابد)
كچھ لوگوں پر جان دينے كو جى چاہتا ہے، يہ لوگ بڑے عجيب ہوتے ہيں، محبت كے امين ہوتے ہيں، پيار برساتے رہتے ہيں، محبت اور آسانيوں كى دولت بانٹتے رہتے ہيں، خلوص نچھاور كرتے رہتے ہىں، اخلاص سكھاتے رہتے ہيں، كردار بناتے رہتے ہيں، تعمير قوم ميں لگے رہتے ہيں، حيات ميں ترقى و خوشحالى كے رنگ بھرتے رہتے ہيں، يہ لوگ معاشرے كے ليے آكسيجن ہوتے ہيں، سانس لينا آساں كرتے ہيں، گھٹن كا گلا گھونٹ ديتے ہيں، مثبت رويوں كى آبيارى كرتے ہيں، منفى سوچوں كو تہہ و بالا كرتے ہيں۔

يہ لوگ وفا كا نقش ہوتے ہيں تازہ ہوا كا جھونكا ہوتے ہيں، يہ لوگ پھول ہوتے ہيں، خوشبو ہوتے ہيں، تتلى ہوتے ہيں، جگنو ہوتے ہيں، بلكہ مختصر يوں كہيے كہ زندگى، محبت، معرفت اور بلند نگاہى سكھانے والا قطبى ستارہ ہوتے ہيں۔ پاكستان ميں ايسا ہى ايك روشن، و دمكتا رہنمائى كے اجالے بانٹتا قطبى ستارہ ’’ابراہيم بن بشير الحسينوى‘‘ ہے۔ جس پر جان دينے كو جى چاہتا ہے، كيوں؟ چليے پڑھتے ہيں اس كيوں كا جواب:

پانچ سال قبل جب پہلى بار مَيں حسينوى صاحب سے ملا تو انھيں سمجھنے كے ليے عظيم يونانى فلاسفر ارسطو كے اس اصول كا سہارا ليا: ’’اگر انسان كى فطرت يا اس كے مزاج كا اندازہ لگانا ہو تو اس كے معمولى اور چھوٹے چھوٹے كاموں سے لگاؤ، كيونكہ بڑے بڑ ے كام تو وہ سوچ سمجھ اور محتاط ہو كر ہى كرتا ہے، جو بعض اوقات اس كى فطرت يا مزاج كے خلاف بھى ہوسكتے ہيں۔‘‘

بلاشبہ ان كى سرشت اور طبعيت انتہائى علم دوست، انسان دوست، دور انديش اور جاذب نظر ہے۔ ميں ان كے بارے ميں وہ واقعہ كبھى نہيں بھول سكتا جو ميرے تجويد كے استاذ جناب قارى رحمت اللہ صاحب كنگن پورى نے سنايا، محدثين كى ياد تازہ كرنے والا يہ واقعہ ان كے اخلاص اور علم حديث كى تڑپ كے ليے كافى ہے: ’’شیخ حسینوی میرے کلاس فیلو تھے، زمانہ طالبعلمى ميں روزانہ بعد نماز ظہر مطالعہ اور تصنیفی کام کے لیے لائبريرى كا رخ كرتے، رات دس گیارہ بجے واپس مدرسہ آتے تب تك تمام طلباء عشائىہ سے فارغ ہوچكے ہوتے، اور كھانا بھى تقريبا ختم ہوچكا ہوتا تھا، حسينوى صاحب كچن ميں جاتے اور طلبہ کے بچےکھچے روٹى كے ٹکڑے پانى كے ساتھ بھگو بھگو كر مزے سے كھاتے، لیکن مطالعہ تصنیفی اورتحقیقی کاموں میں ركاوٹ نہ آنے ديتے۔

ملتِ اسلامیہ کے عظیم محسن ڈاکٹر محمد عبداللہ اعظمی حفظہ اللہ (مدينہ يونيورسٹى) نے حسينوى صاحب كا حديث پر كام ديكھ كر كبار علماء اور محدثين كى ايك مجلس ميں حسينوى صاحب كو مخاطب کرکے کہا کہ حسينوى صاحب! آپ جیسے شخص کو مدینہ منورہ میں ہونا چاہیے تاکہ آپ عظیم کارنامے سرانجام دے سکیں، اور دوسرے سفر حرمین میں اپنی قیمتی کتاب الجامع الکامل شیخ حسینوی صاحب کو ہدیہ دی، جس پر حسينوى صاحب نے كام كيا۔ اس وقت حسينوى صاحب كى دو درجن سے زائد كتب منظر عام پر آچكى ہيں، اور بيسيوں كتب پر ابھى كام جارى ہے۔

آج اس شخصیت كے تلامذہ پورى دنیا ميں موجود ہيں، بیک وقت کئی کام کررہے ہیں، ان كا آبائى شہر قصور ہے، جو اولياءاللہ كا شہر ہے، وہاں كوئى بڑى دىنى درسگاہ نہ تھى، انہى جذبوں كو دل ميں سموئے كسى بھى جماعتى وابستگى اور تعاون كے بغير اگست 2014ء ميں حسينوى صاحب نے قصور ميں ’’جامعہ امام احمد بن حنبل‘‘ كے نام سے مدرسہ كى بنياد ركھى، پچھلے دنوں جب جامعہ احمد بن حنبل ميں جانا ہوا تو شيخ حسينوى صاحب كے كام كو ديكھ كر دل پسيج گيا، ايك عام اور سادہ سى بلڈنگ جہاں كوئى بنيادى سہوليات بھى ميسر نہ ہيں، ليكن پھر بھى طلباء كا علم حديث كے ليے ذوق اور شوق ديكھ كر دل بہت خوش ہوا، ان سب سے بڑھ كر شيخ حسينوى كا بے سرو سامانى كے باوجود دنیا کے جدید حالات، اسلام پر ماڈرن ريسرچ، دينى اور دنياوى تقاضوں سے آگاہ اور باخبر، انٹرنیٹ پر مسلسل نہ صرف اکثر محدثین سے رابطے میں رہتے ہیں، بلکہ پاكستان ميں پہلى بار ’’ابن ِحنبل آن لائن ىونيورسٹى‘‘ كو علامہ اقبال اوپن يونيورسٹى كى طرز پر لانچ كيا، جس سے تقريباً پورى دنيا سے طلباء مختلف كورسز تفسير، حديث، وراثت اور ديگر كئى اسلامى فنون سے مستفيد ہورہے ہيں، اور سب سے دلچسسپ بات يہ ہے كہ ابراہيم بن بشير الحسينوى يہ سارا كام ايك پيشہ ور آدمى كى طرح دھن دولت كمانے كے ليے نہيں، بلكہ ايك بے لوث انداز ميں كررہے ہيں، ايسے لگتا ہے كہ قدرت نے اپنى مخلوق كى خدمت كے ليے انہيں اس كام پر لگا ديا ہے۔ فجزاہ اللہ خير الجزاء
محترم قارئين! ہم مدارس سے پڑھے ہوئے احباب سے ہمارى يہ درس گاہيں خراج مانگتى ہيں، كيونكہ ہم مدارس كى ضروريات كو زيادہ آسانى سے سمجھتے ہيں، اس وقت پاكستان ميں اس وقت تقريبا 20 لاكھ طلباء مدارس اور جامعات سے فارغ التحصيل ہيں، اگر ہم ان مدارس كى اپنى اپنى استطاعت سے مدد كريں تو ان شاءاللہ يہ قرآن و حديث كے چمنستان يونہى لہلاتے رہيں گے۔ ميرى بات كى وضاحت مندرجہ ذيل واقعہ سے زيادہ واضح ہوگى:

ميرے ايك دوست امريكہ ميں ڈاكٹر ہيں ايك دن مجھے كہنے لگے: باسط بھائى، ميں جب بھى پاكستان آتا ہوں تو جس سكول سے ميں نے ميٹرك تك تعليم حاصل كى ہے اس كو كبھى نہيں بھولتا، ميں نے سوچا شايد اساتذہ اور مادرعلمى سے جو پيار ہوتا ہے اس كى بات كررہے ہيں ہوں گے، پھر ايك دن مجھے بتانے لگے كہ جب ميں اس سكول ميں پڑھتا تھا تب اس كا ايك كمرہ اور چارديوارى ہوتى تھى، ميں ڈاكٹر بنا اور امريكہ ميں سيٹ ہوگيا تو جب ميں پہلى بار پاكستان آيا تو اپنے اسكول كا وزٹ كيا، ہيڈماسٹر كو ملا اور اپنى خواہش كا اظہار كيا كہ ميں اس ايك كمرے كو چار كمرے كرنا چاہتا ہوں، اس كے ليے يہ دس لاكھ ركھ ليجيے، جب ميں دوبارہ آيا تو چار كمرے اور چار ديوارى موجود تھى، اب ميں نے اس ميں پينے كے پانى كا ٹھنڈا كولر لگوايا ہے، ميں يہ سب سن كر حيران ہوا كہ يہ دنياوى تعليم كے ليے اپنے مادرعلمى سے محبت كررہے ہيں، اور ايك ہم ہيں جو دينى مدارس كى طرف مڑ كر بھى نہيں ديكھتے… !

الغرض حسينوى صاحب كے ارادوں كى طلاطم خيز موجيں ايك فائيوسٹار يونيورسٹى مانگتى ہيں، جو ان كا خواب ہے، اور اللہ كے ليے اٹھايا گيا قدم كبھى پيچھے نہيں ہٹتا، بلكہ آگے اور آگے اور آگے ہى بڑھتا جاتا ہے۔

ميں نے كئى مدارس دىكھے ہيں، سب ميں ايك جيسا نظامِ تعليم ہے، انفرادى طور پر ہر ادارہ اپنى نظر ميں بہترين كام كررہا ہے، ليكن اجتماعى طور پر پاكستان مىں كوئى معىارى درسگاہ اور يونيورسٹى نہ بن سكى جس كا طرز تعليم جديد ضرورتوں اور دنياوي تعليم كے ہم آہنگ ہو، پاكستان ايك اسلامى اور مذہب پسند لوگوں كا ملك ہے، ىہاں تو حكومتى سطح پر اوپن يونيورسٹى طرز كى يا مذہبى جماعتوں كے سفارتى تعلقات كى بناء پر مدينہ ىونيورسٹى كى برانچ ہونى چاہيے تھى۔غالباملائيشيا يا برونائى ميں مدينہ يونيورسٹى كے كيمپس موجود ہيں، نہايت افسوس سے كہنا پڑتا ہے كہ ہمارى حكومتيں اور مذہبى جماعتيں مدينہ يونيورسٹى تو دور كى بات ، مدينہ يونيورسٹى كے فارغ التحصيل طلباء كو حكومتى اور پرائيويٹ يونيورسٹيز ميں ليكچرار ركھنے سے بھى گريزاں ہيں۔ اس پر اگر مل كر كمپين شروع كى جائے اور سعودى حكومت سے سفارتى سطح پر عمران خان كى حكومت پر دباؤ ڈالا جائے تو ہمارے فاضلينِ مدينہ پاكستان كو مدينہ جيسى رياست بنانے ميں كليدى كردار ادا كرسكتے ہيں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
عبدالباسط عابد
(رائٹر، ٹرينر، موٹيويٹر، سوشل ريفارمر)

Image may contain: 4 people, people sitting and indoor

Calendar

January 2019
S S M T W T F
« Dec    
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
262728293031  

RSS Meks Blog

  • Meks’s top 10 WordPress related posts in 2018 January 22, 2019
    What were the top 10 WordPress related posts that provided the most value to you over the last year? The post Meks’s top 10 WordPress related posts in 2018 appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • List of the best WordPress directory plugins for 2019 January 17, 2019
    Here’s our list of the best WordPress directory plugins that will transform your site into full business-related online directory. The post List of the best WordPress directory plugins for 2019 appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • How to embed Google form in WordPress? January 10, 2019
    Don’t know how to embed Google form in WordPress? Read our tutorial and learn all there is to it, within minutes! The post How to embed Google form in WordPress? appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • Podcast with WordPress – the ultimate 2019 tutorial January 3, 2019
    Why and how you should start a podcast with WordPress? Let us dazzle you with the most relatable business stats and convince you it’s the right thing to do The post Podcast with WordPress – the ultimate 2019 tutorial appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • WordPress 2018 year in review December 24, 2018
    Interested in WordPress 2018 year in review? Here’s our recap of some of the most important things that happened in the WordPress environment. The post WordPress 2018 year in review appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • How to easily change or reset a WordPress password? December 19, 2018
    Easy ways to reset WordPress password manually and with no trouble at all! Plus, a tip why you should change it on a regular basis! The post How to easily change or reset a WordPress password? appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • 4 steps guide to create a WordPress review website December 13, 2018
    Create profitable WordPress review website in 4 easy steps! The post 4 steps guide to create a WordPress review website appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • WCUS 2018 State of the Word December 9, 2018
    Just as last year, join us for WCUS 2018 State of the Word recap and everything you were keen to know about WordPress 5.0, Gutenberg and more! The post WCUS 2018 State of the Word appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • 10+ best Facebook groups for bloggers (you may never heard of) December 6, 2018
    Pick and choose among some of the best Facebook groups for bloggers and start boosting your traffic and engagement as of today! The post 10+ best Facebook groups for bloggers (you may never heard of) appeared first on Meks.
    Ivana Cirkovic
  • Getting ready for WordPress 5.0 (actionable “to the point” tips & explanation) December 5, 2018
    A new major WordPress update (version 5.0) is just around the corner (or it has been released already if you are reading this post after December 6th). During the past few months, we’ve been reading different opinions and points of view regarding WP 5.0 and its upcoming post/page editor, which was available for testing as […]
    Meks

Text

Distinctively utilize long-term high-impact total linkage whereas high-payoff experiences. Appropriately communicate 24/365.

تعاون کریں

سارے کام اللہ تعالی کی توفیق و نصرت سے ہی ہوتے ہیں الحمدللہ اخلاص سے بنائے ہوئے تمام منصوبے اللہ تعالی مکمل کرتے ہیں ۔آپ بھی صدقات ،خیرات اور اپنے مال کے ذریعے جامعہ کے ساتھ تعاون کریں ۔جامعہ کے ساتھ تعاون بھیجنے کے لیے درج ذیل طریقے اختیار کرنا ممکن ہیں

تعاون بذریعہ موبی کیش ۔اکاونٹ03024056187
تعاون بذریعہ ایزی پیسہ 03024056187۔شناختی کارڈ:3510229087223
تعاون بذریعہ پے پال کریڈٹ کارڈز ہولڈرز، بیرون ملک مقیم اور پے پال اکاؤنٹ رکھنے والے حضرات اب پے پال کے ذریعے سے بھی ہمیں ڈونیشن بھیج سکتے ہیں۔ https:paypal.me/hahmad674
تعاون بذریعہ ویسٹرن یونین: محمدابراہیم بن بشیر احمد 03024056187۔شناختی کارڈ:3510229087223
’’مَّن ذَا الَّذِي يُقْرِ‌ضُ اللَّهَ قَرْ‌ضًا حَسَنًا فَيُضَاعِفَهُ لَهُ أَضْعَافًا كَثِيرَ‌ةً ۚ وَاللَّهُ يَقْبِضُ وَيَبْسُطُ وَإِلَيْهِ تُرْ‌جَعُونَ‘
“ایسا بھی کوئی ہے جو اللہ تعالیٰ کو اچھا قرض دے پس اللہ تعالیٰ اسے بہت بڑھا چڑھا کر عطا فرمائے، اللہ ہی تنگی اور کشادگی کرتا ہے اور تم سب اسی کی طرف لوٹائے جاؤ گے “

مَّثَلُ ٱلَّذِينَ يُنفِقُونَ أَموَٲلَهُمۡ فِى سَبِيلِ ٱللَّهِ كَمَثَلِ حَبَّةٍ أَنۢبَتَتۡ سَبعَ سَنَابِلَ فِى كُلِّ سُنبُلَةٍ۬ مِّاْئَةُ حَبَّة وَٱللَّهُ يُضَعِفُ لِمَن يَشَآءُ‌ۗ وَٱللَّهُ وَٲسِعٌ عَلِيمٌ ( سُوۡرَةُ البَقَرَة۔٢٦١ )
’’ جولوگ اپنے مال اللہ کی راہ میں ڈرف کرتے ہیں، اُن کے خرچ کی مثال ایسی ہے جیسے ایک دانہ بویا جائے اور اس سے سات بالیں نکلیں اور ہر بال میں سَو دانے ہوں۔اسی طرح اللہ جس کے عمل کو چاہتے ہیں، افزونی عطا فرماتے ہیں۔اور الله تعالیٰ بڑی وسعت والے ہیں، جاننے والے ہیں۔ ‘‘

WhatsApp chat