وضوکی ایک ضعیف دعا

وضو کے شروع میں بسم اللہ اور آخر میں اشھد ان لاالہ الا اللہ وحدہ لا شریک لہ واشھد ان محمدا عبدہ ورسولہ پڑھنا مسنون ہے ۔اس کے علاوہ وضو کی کوئی بھی دعا ثابت نہیں ہے۔ایک یہ دعا بھی ہے جو رسول اللہ ﷺ سے ثابت نہیں ہے لیکن افسوس کہ ان پڑھ مولیوں نے اس من گھڑت دعا کے فلیکس بنوا کر مساجد میں لگائے ہوئے ہیں ۔یاد رہے کہ اس کو پڑھنادرست نہیں کیونکہ رسول اللہ ﷺ نے اس دعا کو نہیں پڑھا اور نہ ہی کسی صحابی نے ۔وہ دعا یہ ہے :چہرہ دھوتے وقت اللھم بیض وجہی ،دایاں ہاتھ دھوتے وقت اللھم آتنی کتابی بیمینی ،بایاں ہاتھ دھوتے وقت اللھم لا تاتنی کتابی بشمالی ،سر کے مسح کے وقت اللھم حرم شعری النار ،اور دیگر دعائیں ،کانوں کے مسح کےوقت اللھم اجعلنی من الذین یسبقون القول ، پاؤں دھوتے وقت اللھم ثبت قدمی علی الصراط وغیرہ ۔
ان دعاؤں کا کوئی اصل نہیں ہے اور نہ ہی محدثین نے ان دعاؤں کو ذکر کیا ہے ۔امام ابن الصلاح نے کہا :اس بارے میں کوئی حدیث صحیح نہیں ہے۔(التلخیص الحبیر :۱؍۱۰۰)نیز دیکھیں (الجامع الکامل فی الحدیث الصحیح الشامل :۲؍۲۷۷۔۲۷۹)

About the author

ibnebashir

Add Comment

Click here to post a comment